چلاس: چلاس کے نواحی گاوں کھنر کشمیری ہیٹ سے تعلق رکھنے والے وحدت کالونی جٹیال گلگت میں رہائش پذیر 19 سالہ عبدالخالق_فتاح اپنی محنت اور کرکٹ سے بے پناہ محبت کے باعث قومی سطح کی کرکٹ میں اپنے لئے جگہ بنانے میں کامیاب ہوگئے اور ملتان سلطان کی جانب سے پی ایس ایل کے چوتھے ایڈیشن میں بحیثیت بیٹسمین اپنی ٹیم کی نمائیندگی کرینگے ۔ ان کے والد عبدالجبار اپنے زمانے مشیور پولو پلئیر تھے ۔۔۔۔۔ 2009 میں دس سال کی عمر میں لالک جان سٹیڈیم گلگت میں ٹیپ بال سے اپنی کرکٹ کیریر کا آغاز کیا اور اپنی بہترین پرفارمنس کی بدولت صوبائی سطح پر مختلف ٹورنامنٹس میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ۔۔2012 میں” ٹیلنٹ ہنٹ ایونٹ ” کے سلسلے میں سینیر کرکٹرز کا دورہ گلگت کے دوران ان کی کارکردگی کو بہت زیادہ سراہا گیا تاہم کم عمری کے باعث ان کی سیلکشن نہ ہوسکی عبدالخالق فتاح نے کرکٹ سے بے پناہ لگاو کے باعث نویں جماعت کے بعد تعلیم کو خیرباد کہہ کر کرکٹ کو ہی اوڑھنا بچھونا بنالیا اور اپنی شوق کی تسکین کیلئے اسلام آباد میں واقع ملک کی بہترین باجوہ کرکٹ اکیڈمی جوائن کیا جس کو ملک کے بہترین عالمی شہرت یافتہ باولر عامر خان نے بھی جوائن کیا اور اس اکیڈمی کی بہترین ٹریننگ کے بدولت عامرخان آج بین الاقوامی سطح پر پاکستان کی نمائیندگی کررہاہے ۔۔۔۔۔ پی ایس ایل ایڈیشن فور کے سلسلے میں پہلی بار شامل ہونیوالی ٹیم ملتان سلطان کے فیصل آباد ٹرائیل کیمپ میں بطور بیٹسمین شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرکے سیلیکٹرز کو اپنی سیلیکشن پر مجبور کردیا یوں #عبدالخالق_فتاح گلگت بلتستان کے پہلے کرکٹر کے طور پر 14 فروری سے شروع ہونیوالی
Pakistan Super League ( PSL) fourh edition
میں اپنی ٹیم کی نمائیندگی کرینگے … جی بی گورنمنٹ کو ایسے ہونہار نوجوانوں کی بھرپور حوصلہ افزائی کرنی چاہئے تاکہ وہ شوق اور جذبے کے ساتھ عالمی سطح پر ملک وقوم کا نام روشن کرسکیں۔۔۔۔۔۔۔۔ ہم اپنے چھوٹے بھائی کی شاندار پرفارمنس کے باعث ملتان سلطان میں ان کی سلیکشن پر انہیں خصوصی مبارکباد پیش کرنے کے ساتھ ساتھ ہرشعبے میں ان کی کامیابی کیلئے دعاگو ہیں