نئی دہلی: بھارتی الیکشن کمیشن نے بی جے پی سمیت تمام سیاسی جماعتوں پر انتخابی مہم میں فوج کی تصاویر کے استعمال پر پابندی لگا دی۔ ادھر ایم این ایس کے سربراہ راج ٹھاکرے نے کہا ہے کہ الیکشن سے قبل مودی ایک اور پلوامہ جیسا حملہ کروا سکتے ہیں۔ کانگریس رہنما وجے شانتی نے کہا کہ مودی میں دہشت گرد نظر آتا ہے۔ انتخابات سے پہلے مودی سرکار کا پلواما اور بالا کوٹ ڈرامہ، اب انتخابی مہم میں فوج کو گھسیٹنا شروع کر دیا۔ زیرو ابھینندن کو ہیرو بنانے کی کوشش، شہروں میں جگہ جگہ ابھینندن کی تصاویر کےساتھ بینرز لگا دیے جس پر بھارتی الیکشن کمیشن نے نوٹس لیا اور مودی سمیت تمام سیاسی جماعتوں کو انتخابی مہم میں فوجیوں کی تصاویر لگانے سے روک دیا۔ ادھر ایم این ایس کے سربراہ راج ٹھاکرے نے پٹھان کوٹ اور پلوامہ حملوں کو الیکشن سے جوڑتے ہوئے کہا کہ انتخابات جیتنے کی کوشش میں ایک دو ماہ میں کوئی پلوامہ جیسا واقعہ ہو سکتا ہے اور مودی نیا حملہ کرا سکتے ہیں۔ کانگریس کی رہنما وجے شانتی کا کہنا ہے مودی دہشت گرد جیسے لگتے ہیں  جس سے ہر آدمی خوفزدہ ہے کہ کب کونسا بم کس پر پھینک دے۔ ایک بھارتی ویب سائٹ کے مطابق نریندر مودی کی جماعت بی جے پی کے لیے آئندہ انتخابات میں کامیابی حاصل کرنے کی بات یقین سے نہیں کی جا سکتی کیونکہ ملک میں پہلے سے جاری بے روزگاری کے ساتھ اب بالا کوٹ حملے کے بعد مودی سرکار کو ہزیمت کا سامنا ہے۔