اسلام آباد: سپریم کورٹ آف پاکستان نے زیادتی کیس میں قید ملزم کو 5سال بعد بری کردیا،چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے ہیں کہ استغاثہ جرم ثابت کرنے میں ناکام رہا،شک کا فائدہ دیتے ہوئے حسین احمد کو بری کیا جاتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے زیادتی کیس کے ملزم کی اپیل کی سماعت کی۔2014 میں حسین احمد سمیت دیگر ملزمان پر مانسہرہ میں 2 لڑکیوں سے زیادتی کا الزام لگاتھا۔ٹرائل کورٹ نے ملزمان کو 5 سال قید اور جرمانے کی سزا سنائی لیکن ہائیکورٹ نے سزا کیخلاف حسین احمد کی اپیل مسترد کردی تھی۔ سپریم کورٹ نے ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا۔چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ حسین احمد صرف گاڑی چلا رہا تھا، استغاثہ جرم ثابت کرنے میں ناکام رہا، شک کا فائدہ دیتے ہوئے حسین احمد کو بری کیا جاتا ہے