ملتان (صفدرعلی بخاری سے ) چئرمین مستقبل پاکستان انجینئر ندیم ممتا زقریشی نے کہا کہ ارکان اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافے کا بوجھ ملکی معیشت کے ساتھ ساتھ عوامی مسائل میں اضافے کی وجہ بھی بنے گا ،پاکستان جیسے کمزور معیشت کے حامل ملک میں جہاں پہلے ہی غربت ،بے روزگاری اور مہنگائی نے ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں وہاں پر ارکان اسمبلی کی تنخواہیں ڈبل کرنے کا فیصلہ سمجھ سے بالاتر امر ہے ،ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ ممبران اسمبلی کو درخواست کی جاتی ہے کہ جب تک ملک کے حالات ٹھیک نہیں آپ اپنی تنخواہیں ملکی خزانے میں جمع کرائیں کیونکہ اسمبلی میں موجود کوئی بھی رکن اسمبلی ایسا نہیں ہے جسے تنخواہ کی ضرورت ہو ۔ان خیالات کا اظہار پنجاب اسمبلی کے ممبران کی تنخواہوں کے اضافے پر خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت کے اس فیصلے سے واضح ہوگیا ہے کہ اس میں اور ماضی کی حکومتوں میں اب کوئی فرق نہیں رہا کیونکہ ماضی کے حکمران بھی عوامی مفادات کا گلا گھونٹ کر ذاتی مفادات کے حصول میں مگن تھے اور اب یہ بھی وہی طرز حکمرانی کو آگے بڑھا رہے ہیں ۔انہوں نے مزید کہا کہ روز بروز کے بڑھتے ہوئے مسائل کی وجہ سے عوام پہلے ہی دبے لفظوں میں حکومت کو تنقید کا نشانہ بنا رہی تھی اب اس فیصلے سے ان کے غصے میں مزید اضافہ ہوجائے گا ،اس سے پہلے کہ حالات سے دل برداشتہ قوم اپنے غصے کا کھل کر اظہار کرے حکومت کو ان کی خوشحالی کیلئے بھی اقدامات کرنے ہوں گے ۔