سرینگر : مقبوضہ کشمیر کی سابق کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے کہاہے کہ بھارت میں اقلیتوں کےساتھ بہت براسلوک ہورہاہے، گائے کاگوشت کھانے کے الزام میں مسلمانوں کوقتل کیاجاتاہے۔ تفصیلات کے مطابق کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے محبوبہ مفتی نے کہاہے کہ بھارت میں اقلیتوں کےساتھ بہت براسلوک ہورہاہے، گائے کاگوشت کھانے کے الزام میں مسلمانوں کوقتل کیاجاتاہے، بھارت میں الیکشن کے باعث اقلیتوں پرزیادہ حملے ہورہے ہیں، مودی سرکاراپنی نااہلی پرپردہ ڈالنے کیلئے ہندومسلم فسادچاہتی ہے،بھارت سیکولربنیادوں پربناتھا،آج اسکی بنیادیں ہلائی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کودیوارسے لگایاجارہاہے،اللہ جانتاہے نتیجہ کیاہوگا؟ مودی سرکارآرٹیکل 370 کوختم نہیں کرسکتی،ڈرہے آئین میں چوردروازے سے ترمیم نہ کی جائے، آرٹیکل 370 بھارت سے کشمیرکے تعلق کی بنیادہے،آئین تبدیل کیاتوسوچیں گے بھارت کیساتھ رہناہے یانہیں رہنا ہے ۔