خرطوم: سوڈان میں فوجی کونسل کے سربراہ عود ابن عوف ایک روز بعد ہی مستعفی ہو گئے ۔ ابن عوف نے کہاکہ انہوں نے شدید مظاہروں اور جمہوری اقدار کے فروغ کی خاطر عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ کیاہے ۔ابن عوف نے لیفٹیننٹ جنرل عبد الفتاح عبدالرحمن برہان کو اپنا جانشین نامزد کیاہے ۔مظاہرین نے احتجاج ختم کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا تھا کہ تختہ الٹنے والے افراد عمر البشیر کے بہت قریبی لوگ ہیں۔مظاہرے کی سربراہی کرنے والی تنظیم سوڈان پروفیشنل ایسوسی ایشن نے عود ابن عوف کے عہدہ چھوڑنے کے فیصلے کو مظاہرین کی فتح قراردیا ہے ۔ادھر سوڈان کی نیشنل انٹیلی جنس اینڈ سکیورٹی سروس کے سربراہ صالح عبداللہ نے بھی گزشتہ روز اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔عبوری کونسل نے ان کے استعفے کی تصدیق کر دی ہے ۔سوڈان کی نئی انتظامیہ نے خرطوم میں رات کا کرفیوختم کردیا ہے جس کے بعد حالات معمول پر آنا شروع ہو گئے ہیں۔نئی انتظامیہ نے سوڈان میں احتجاج کے دوران گرفتار کئے جانے والے ہزاروں مظاہرین کی رہائی کے احکامات بھی جاری کئے ہیں جن پر فوری عملدرآمد شروع کردیا گیا ہے ۔ سوڈان عود ابن عوف نے لیفٹیننٹ جنرل عبد الفتاح عبدالرحمن برہان کو جانشین نامزد کردیا