کوئٹہ: صدر مملکت عارف علوی نے کہا ہے سانحہ ہزار گنجی جیسے واقعات کے بعد بھی عوام کی یکجہتی نے دشمن کی سازش کو ناکام بنا دیا۔ امن وامان کے قیام پر کوئی سمجھوتا نہیں کیا جائے گا ، پاکستان کا آئین ہر باسی کے تحفظ کی ضمانت دیتا ہے ، عوام کو یقین دلاتے ہیں کہ نیشنل ایکش پلان پر من وعن عمل کرتے ہوئے ہر باسی کے حقوق کا تحفظ کیا جائے گا۔کوئٹہ میں سانحہ ہزار گنجی کے شہدا کے لواحقین سے اظہار تعزیت اور فاتحہ خوانی کیلئے صدر مملکت عارف علوی امام بارگاہ ولی عصر پہنچے ، گورنر بلوچستان جسٹس (ر) امان اللہ یاسین زئی، وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان اور صوبائی وزرا ان کے ہمراہ تھے ۔ اس موقع پر صدر مملکت کا کہنا تھا پاکستان کیخلاف سازشیں کی جارہی ہیں تاہم اللہ کا شکر ہے کہ اتنی قربانیوں کے بعد بھی عوام میں کوئی تفریق پیدا نہیں ہوئی۔صدر مملکت نے مزید کہا کہ مجھے بے چینی تھی کہ عوام کی جان و مال کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے ۔ ہزارہ برادری کے ساتھ پیش آنیوالے اس سانحہ پر ذاتی طور پر تکلیف پہنچی ہے ۔ انہوں نے کہا شہدا کے لواحقین کی اس ملک کیلئے قربانیاں ایک احسان اور اس کا کوئی نعم البدل نہیں ہو سکتا۔صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا امن وامان کی صورتحال بہتر بنانے کیلئے وفاق صوبائی حکومت کیساتھ ہے ۔انہوں نے کہا انسانی جانوں کا کوئی نعم البدل نہیں ، شہریوں کی حفاظت کی ذمہ داری ریاست کی ہے جس کے بارے میں حکمرانوں سے آخرت میں بھی سوال کیا جائے گا ۔ انہوں ہزارہ برادری کو یقین دہانی کرائی کہ وفاقی حکومت ان کی ہر ممکن مدد کرے گی۔ عارف علوی